Dais Hue Pardais / دیس ہوئے پردیس By Mustansar Hussain Tarar

    Free download ã PDF, eBook or Kindle ePUB free é Mustansar Hussain Tarar

    Dais

    Don't know when we will became perdais. Urdu Oh its a beautifully written book. Love it love it love it. Urdu مرے دیس کی ان زمینوب کے بیٹے جہاں صرف بے برگ پتھر ہیں صریوں سے تنہا جہاں صرف بے مہر موسم ہیں اور ایک دردوں کا سیلاب ہے عمر پیما! وطن ڈھیر کے منجھے برتنوں کا
    جیسے زندگی کے پسینوں میں دوبی ہوئی محنتیں دربد ڈھونڈتی ہیں Urdu

    اُن پردیسیوں کی کہانی جن کے لیے اُن کا اپنا دیس بھی پردیس ہوکر رہ گیا تھا۔ Dais Hue Pardais / دیس ہوئے پردیس